Posts

Showing posts with the label پروا

Parwa, Bano Qudsia, Novel, پروا, بانو قدسیہ, ناول,

Image
 Parwa, Bano Qudsia , Novel, پروا, بانو قدسیہ , ناول, " میں نے جان بوجھ کرتمہاری بے عزتی کی تھی۔کل۔تمہارے مزہب پر حملہ کیا تھا " صوفیہ نے ہنس کر کہا،"مزہب پر، تو کیا ہمارے مزہب دو ہیں کہ تم حملہ کرتے " " پھر بھی ہمارے یہاں کے لوگ تو کچھ یہی سمجھتے ہیں کہ" ۔۔۔۔۔ اختر رُک گیا۔ صوفیہ نے سر جھکا کر بڑی افسردگی سے کہا"اسی سمجھ کے پھیر نے تواتنے فاصلے قائم کر دئے ہیں۔ " " میں ان کے حصے کی بھی تم سے معافی چاہتا ہوں " مکئ کے دانے چٹخنے کی آواز آئ۔ " اور میں ملکۂ بنگال اپنے لوگوں کی طرف سے تم سب کو معاف کرتی ہوں "   اگر قاری اس ناول کو پڑھ کر خود کو تحت الثری میں اترتا محسوس نہی کرتا تو میرے خیال سے یہ ناول اس شخص کے لیے لکھا ہی نہی گیا۔   سادہ خیالی کے لباس میں ایک کثیف کہانی !   جوش نے سقوطِ حیدرآباد کے بعد جب اس سرزمین پر دوبارہ قدم رکھا تو انہوں نے سرزمینِ دکن سے اپنی بےپناہ محبت ، اہلِ دکن کے ساتھ اپنی وابستگی ، والئ ریاست سے شکوہ ، اہلِ دکن سے اپنی بےاندازہ محبت اور حیدرآباد کے ذرہ ذرہ سے جذباتی وابستگی کو