Posts

Showing posts with the label نمرہ احمد

Woh Mera Hay by Nemrah Ahmed - وہ میرا ہے از نمرہ احمد

Image
 Woh Mera Hay by Nemrah Ahmed - وہ میرا ہے از نمرہ احمد Nimra Ahmed is the author of the book Wo Mera Hai Novel Pdf. It is another great social, romantic story by Nimra Ahmad. The writer discussed the human feelings and emotions for love. She expressed the feelings of the woman towards different matters in life. She explained the importance of relationship for a happy life.     Nimra Ahmed is a famous novelist and story writer. She produced some outstanding books in a few years like Namal, Jannat Kay Pattay, and Pahari Ka Qaidi. She is writing some serialized stories in the digests of Urdu. Nimra Ahmed earned fame for her unique writing style in a little age. I hope you like to read the book Wo Mera Hai Novel Pdf and share it with your friends. Download

Iblees by Nemrah Ahmed - ابلیس از نمرہ احمد

Image
 Iblees by Nemrah Ahmed - ابلیس از نمرہ احمد کلاس میں پن ڈراپ سائیلنس تھا ، سب دم بخود سحر زدہ سے سر ہاشم آفندی کو سن رہے تھے ۔ وہ ہمارے سائکالوجی کے نئے پروفیسر تھے۔۔۔ہینڈسم ، سمارٹ ، جینئس، حاضر جواب اور مہربان۔ وہ سب کچھ تھے۔ کوئی منتر تھا ان کے پاس کہ چند ہی دنوں میں ساری کلاس ان کی طرف کھنچی چلی آتی۔ کتنے اچھے ہیں نا سر آفندی ؟ فاطمہ نے کہا۔ ہوں گے۔ میں نے سرسری کہا۔ بہت کم لوگ ایسے نیک ہوتے ہیں حلیمہ ، جانتی ہو ان کا تعلق علماء خاندان سے ھے۔ بلکہ بر صغیر میں اسلام کو متعارف ان کے پرکھوں نے ہی کروایا تھا۔ میں نے انسانوں سے متاثر ہونا چھوڑ دیا ھے فاطمہ مجھے یہ سب مت بتاو۔ انسان وہ نہیں ہوتے جو دکھائی دیتے ھیں ۔ فاطمہ نے مجھے خفگی سے دیکھا۔ سب مرد ایک جیسے نہیں ہوتے۔ ہاں سب مرد ایک جیسے نیں ہوتے لیکن فارمولا سب پہ ایک جیسا ہی اپلائی ہوتا ھے ۔ جو محرم ھے وہ مرد آپ کے لئے اچھا ھے اور جو محرم نہیں اس سے تنہائی میں ملنے کی اجازت میرے رب نے نہیں دی۔ چاہے وہ تنہائی ٹیلیفونک گفتگو تک ھو یا کسی کے پروفیسر کے آفس میں جا کر ملنے تک۔ سب مرد ایک جیسے نھیں ہوتے فاطمہ لیکن فارمولا سب پہ ایک جیسا

Mere Khawab mere Jugnoo by Nemrah Ahmed - میرے خواب میرے جگنو از نمرہ احمد

Image
  Mere Khawab mere Jugnoo by  Nemrah Ahmed  - میرے خواب میرے جگنو از  نمرہ  احمد ﻧﻮ ﺳﺎﻝ، ﺩﻭ ﻣﮩﯿﻨﮯ ﺍﻭﺭ ﺗﯿﺌﺲ ﺩﻥ ﮐﯽ ﺟﺪﺍﺋﯽ ﻧﮯ ﺳﻤﻞ ﺟﮩﺎﻧﮕﯿﺮ ﮐﻮ ﺑﺎﻻﺧﺮ ﯾﮧ ﺑﺎﺕ ﺳﻤﺠﮭﺎ ﮨﯽ ﺩﯼ ﺗﮭﯽ ﮐﮧ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﯽ ﻗﺴﻤﺖ ﮐﺎ ﺗﻌﻠﻖ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺷﮑﻞ ﻭ ﺻﻮﺭﺕ ﺳﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ۔۔ ﻣﺎﮦ ﻧﻮﺭ ﺟﯿﺴﯽ ﺣﺴﯿﻦ ﻟﮍﮐﯽ ﺍﯾﺘﮭﻨﺰ ﺟﻨﺮﻝ ﺍﻧﺴﺮﻣﺮﯼ ﻣﯿﮟ ﺗﮍﭖ ﺗﮍﭖ ﮐﺮ ﺧﺎﻟﯽ ﮨﺎﺗﮫ ﺩﻧﯿﺎ ﺳﮯ ﺟﺎﺳﮑﺘﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺳﻤﻞ ﺟﮩﺎﻧﮕﯿﺮ ﺟﯿﺴﯽ ﻭﺍﺟﺒﯽ ﺻﻮﺭﺕ ﻭﺍﻟﯽ ﻟﮍﮐﯽ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﺑﮭﯽ ﻣﻞ ﺳﮑﺘﯽ ﮨﮯ۔۔ ﻣﺤﺒﺖ ﺣﺴﻦ ﺍﻭﺭ ﺧﻮﺑﺼﻮﺭﺗﯽ ﮐﯽ ﻣﺤﺘﺎﺝ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ۔۔ ﯾﮧ ﺗﻮ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺑﺴﺘﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﻮ ﺻﺮﻑ ﻗﺴﻤﺖ ﺳﮯ ﮨﯽ ﺣﺎﺻﻞ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﻋﺘﺒﺎﺭ ﻭ ﺍﻋﺘﻤﺎﺩ ﺳﮯ ﭘﺎﺋﯿﺪﺍﺭ ﺑﻨﺎﯾﺎ ﺟﺎﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ۔۔ ﻣﺤﺒﺖ ﯾﺎ ﺗﻮ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ﯾﺎ ﭘﮭﺮ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ ﺍﻭﺭ ﺍﮔﺮ ﻣﺤﺒﺖ ﮨﻮ ﺗﻮ ﻭﮦ ﮐﺒﮭﯽ ﺧﺘﻢ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ، ﭼﺎﮨﮯ ﻭﮦ ﺩﮬﯿﺮﮮ ﺩﮬﯿﺮﮮ ﺩﻟﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺟﻨﻢ ﻟﯿﻨﮯ ﻭﺍﻟﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﮨﻮ ﯾﺎ ﭘﮩﻠﯽ ﻧﻈﺮ ﮐﯽ۔۔ ’’ﺍﻭﺭ ﮐﻮﻥ ﮐﮩﺘﺎ ﮨﮯ ﭘﮩﻠﯽ ﻧﻈﺮ ﮐﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﭘﺎﺋﯿﺪﺍﺭ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ۔۔ ‘‘ ﺳﻤﻞ ﻧﮯ ﻣﺴﺮﺕ ﺳﮯ ﺳﻮﭼﺎ ﺗﮭﺎ۔۔ ﻧﻤﺮﮦ ﺍﺣﻤﺪ ﮐﮯ ﻧﺎﻭﻝ ’’ ﻣﯿﺮﮮ ﺧﻮﺍﺏ ﻣﯿﺮﮮ ﺟﮕﻨﻮ ‘‘ ﺳﮯ ﺍﻗﺘﺒﺎﺱ Download 

Apni Ungli by Nemrah Ahmed - اپنی انگلی از نمرہ احمد

Image
 Apni Ungli by  Nemrah Ahmed  - اپنی انگلی از  نمرہ احمد اپنی انگلی از نمرہ احمد نمرہ احمد کے قلم سے ایک مختصر افسانہ جو پاکیزہ ڈائجسٹ میں شائع ہوا۔۔ نمرہ احمد اپنے قبیلے کے ہر فن کار سے میلوں آگے ہیں۔ انسان شناسی اور کائنات فہمی یوں تو ادب اور فلسفے کے بنیادی موضوع ہیں لیکن اس راہ میں لوگ بھٹکتے زیادہ اور منزل پر کم ہی پہونچتے ہیں لیکن  ان کی سب سے بڑی خصوصیت  ہمارے نزدیک یہی ہے کہ وہ انسان اور اس کے نفس کو پہچاننے کی اپنی سعی جمیل میں کامیاب ہو چکی ہیں۔ انسان جسے ’’اس (اللہ )نے  ایک ذرا سی بوند(نطفے) سے پیدا کیا اور دیکھتے ہی دیکھتے وہ صریحاًایک جھگڑالو ہستی بن گیا (النحل۔ 4)اور ’’انسان کا حال یہ ہے کہ جب ہم اس کو نعمت عطا کرتے ہیں تو اینٹھتا ہے اور پیٹھ موڑ لیتا ہے اور جہاں ذرا  کوئی مصیبت پڑی تو مایوس ہو نے لگتا ہے (بنی اسرائل۔83)واقعی انسان بڑا تنگ دل واقع ہوا ہے (بنی اسرائل۔ 100)بے شک انسان بڑا لالچی، تھڑ دلا، چھوٹے دل والا پیدا ہوا ہے جب اس پر کوئی مصیبت آتی ہے تو بے قرار ہو کر فریادی بن جاتا ہے اور جب مال مل جاتا ہے تو بخل سے کام لیتا ہے (المعارج 19۔21) نمل کا ایک کردار (دس گیا

Qaraqram ka Taj Mahal by Nemrah Ahmed - قراقرم کا تاج محل از نمرہ احمد

Image
   Qaraqram ka Taj Mahal by   Nemrah Ahmed   - قراقرم کا تاج محل از   نمرہ احمد تم کبھی نہیں  بدلو گی پریشے جہاں زیب ۔تم ہمیشہ عام چیزوں میں بھی خوبصورتی تلاشتی رہو گی۔وہ اس کے خوبصورت تخیل پر ہنس دیا۔ تم بھی تو یہی کرتے ہو میں دعا کروں گی گل بھی  مارگلہ پر ایسے بادل اتارے۔جیسے تین ماہ تین دن پہلے اترے تھے ۔ میں دعا کروں گا میری پری مجھے اسی طرح سفید اور گلامی رنگ میں  ملے تم کل وہی کپڑے پہننا جو اس روز پہنے تھے ۔ پریشے نے  اپنے  جوگرز کو دیکھا کیا وہ یہی پہن کر افق سے ملنے جائے گی ۔نہیں وہ نئے خریدے گی افق کو کون سا ان کا ڈائزائن یاد ہو گا مردوں کو ایسی باتیں یاد کہاں رہتی ہیں بھلا۔ ٹھیک ہے تم بھی وہی جیکٹ پہننا پھر چند لمحے دونوں خاموش رہے دونوں نے  کچھ سوچا اور  ایک ساتھ بولے  اور تم وہی والا ۔۔مگر کچھ یاد آنے پر دونوں خاموش اکٹھے بولے تھے ایک دوسرے کی بات نہیں سن پائے تھے ۔ کل تمہارے ماموں کے پاس چلیں گے  وہ ابھی پچھلی بات میں  ہی تھی بے دھیانی میں  بولی وہ کیوں؟؟  تمہیں ٹام کروز نے  پر پوز کیا تھا نا بس وہی لے کر جائیں گے  پھر دونوں ہنس دیے اچھا آدمی ہ کر لوں گی  میں اسی سے  شادی۔

Beli Rajputan Ki Malika by Nemrah Ahmed - بیلی راجپوتاں کی ملکہ از نمرہ احمد

Image
 Beli Rajputan Ki Malika by Nemrah Ahmed - بیلی راجپوتاں کی ملکہ از نمرہ احمد نمرہ احمد ان چند رائٹرز میں سے ایک ہیں جن کے ٹاپک عام عنوان سے زرا ہٹ کر ہوتے ہیں اور کہانی ایسے الجھی ہوئ ہوتی ہے کہ آپ کہانی کے ختم ہونے کے بعد ہی خود کو الجھن سے نکالا ہوا محسوس کرینگے. کہانی شروع ہوتی ٧۰ سال پرانے دور میں جہاں "بیلی راجپتاں" نامی ریاست کے جنگلوں میں رتھ پہ سوار "ملکہ مایا فرنینڈس" کو راستے میں لٹیرے روک لیتے ہیں مگر لٹیروں کا سردار ملکہ کو جانے کا کہہ دیتا ہے اور ملکہ سمجھ جاتی ہے کہ یہ "بدر غاذان" نامی بندہ تھا جس سے اس کی ملاقات ہو چکی تھی. مایا جب اپنے محل پہنچتی ہے تو اسے معلوم ہوتا ہے کہ پراثرار طرح سے محل میں آگ لگنے کی وجہ سے انکے شوہر "شیکھر" کا انتقال ہو گیا ہے. گاؤں میں یہ بات مشہور ہے کہ گاؤں کے قبرستان میں ایک آسیب ہے جو قبرستان کے رستے میں آنے والوں کو مار دیتا ہے. مایا کو شک ہے کہ اس کے شوہر کو مارا گیا ہے . وہ بدر کے ساتھ ملکر وارات کی تحکیکات کرتے ہیں جسکے دہران دونوں کو ایک دوسرے سے محبت ہو جاتی ہے. بدر کی منگنی "زھرا" نا

Paris by Nemrah Ahmed - پارس از نمرہ احمد

Image
Paris by Nemrah Ahmed - پارس از نمرہ احمد کانفرنس روم میں گفتگو کی بھنبھناہٹ سی تھی۔ لمبی میز کے گرد براجمان افراد میں سے کچھ آپس میں معمول کی بات چیت کر رہے تھے۔ باقی اپنے کاغذات اور فائلز کی ورق گردانی میں مصروف تھے۔ یہ کسی اہم میٹنگ کے آغاز سے قبل کا ایک منظر تھا۔ کانفرنس ٹیبل کی سربراہی کرسی خالی تھی۔ کرسی کے دائیں طرف بیٹھے صاھب گاہے بگاہے کبھی کرسی پہ اور کبھی گھڑی پر نگاہ ڈال لیتے انتظار در انتظار۔۔۔۔ Download

Sans Sakin Thi by Nemrah Ahmed - سانس ساکن تھی از نمرہ احمد

Image
 Sans Sakin Thi by Nemrah Ahmed - سانس ساکن تھی از نمرہ احمد سانس ساکن تھی، نمرا احمد صاحبہ کا تحریر کردہ ناول ہے۔ نمرا جی کے رائٹنگ اسٹائل پہ ہم پہلے ہی تفصیلی گفتگو کر چکے ہیں جسے یہاں ملاحظہ کیا جا سکتا ہے۔ سانس ساکن تھی، نمرا جی کے ابتدائی دور کا ناول ہے جس کے بارے میں وہ پیش لفظ میں لکھتی ہیں؛ ”سانس ساکن تھی“ کہانی میری ان تحریروں میں سے ایک ہے جب میں نے لکھنا شروع کیا۔ اس تحریر کی اشاعت سے مجھے حوصلہ ملا اور مزید لکھنے کی خواہش پیدا ہوئی۔ یقیناً آپ کو اس کہانی میں بہت سی غلطیاں اور خامیاں نظر آئیں گی۔ مگر اس کے باوجود بہت سے لوگوں نے میری اس تحریر کو بہت پسند فرمایا اور اللہ تعالیٰ نے مجھے اردو پاپولر فکشن میں ایک مقام عطا کیا۔ میں خواتین ڈائجسٹ کی ایڈیٹر امت الصبور کی بےحد مشکور ہوں جنہوں نے میری تحریر کو اپنے ڈائجسٹ میں جگہ دے کر میری حوصلہ افزائی کی“ Download

Mushif by Nemrah Ahmed - مصحف از نمرہ احمد

Image
 Mushif by Nemrah Ahmed - مصحف از نمرہ احمد "جی واقعی! ان کے چبا کر کہنے پہ وہ مسکرایا- "ٹھیک ہے محمل بی بی ! تھانے چلیئے آپ سلطانی گواہ ہیں،گواہی دیں اور فواد کریم کو ساری زندگی جیل میں سڑتا دیکھیں- میں نے تو سوچا تھا گھر کی بات گھر میں رہ جائے،لیکن اگر آپ چاہتے ہو کہ ساری دنیا کو علم ہو کہ فواد نے گھر کی بچی کا سودا کیا ہے تو ٹھیک ہے،ہم اس سلطانی گواہ کو ساتھ لے چلتے ہیں نہ آپ اس بچی کو سمجھا بجھا کر چپ کرا سکیں گے،نہ ہی فواد کبھی باہر آئے گا- چلو محمل- ارے نہیں اے ایس پی صاحب محمل ہماری بچی ہے-بھائی صاحب بس یونہی ناراض ہیں،ہمیں یقین ہے کہ یہ پولیس کی حفاطت میں رہی ہے-عزت سے گھر آئی ہے-غفران چچا نے بوکھلا کر بات سنبھالی- نہ بھی یقین کریں ،تو بھی ہم نے محمل کو مسجد بجھوا دیا تھا-عورتوں کی مسجد ہے- میری بہن ادھر پڑھاتی ہے- اس نے آغا جان کو بغور دیکھتے ہوئے بہن پر زور دیا اور ایک سخت نظر ڈالتا ہوا پلٹ گیا- وہ ابھی تک ویسے ہی شاکڈ ساکت کھڑی تھی-جیسے اسے آغا جان کے الفاظ کا ابھی تک یقین نہیں آیا تھا- گاڑیاں گیٹ سے باہر نکل گئیں ۔۔۔۔ غفران چچا موبائل پر کوئی نمبر ملانے لگے- تائ

Mehr-ul-Nisa by Nemrah Ahmed - مہر النساء از نمرہ احمد

Image
 Mehr-ul-Nisa by Nemrah Ahmed - مہر النساء از نمرہ احمد ''وہ محبت جس کا مقام اس دنیا کے تمام رشتوں میں پائی جانے والی محبت سے ارفع ہے، وہ محبت ماں کی محبت ہوتی ہے۔'' مہر النساء از نمرہ احمد Mehar Un Nisa is a Muslim Girl Name, it has multiple Islamic meaning, the best Mehar Un Nisa name meaning is Beautiful Woman, and in Urdu it means خوبصورت عورت. The name is Indian originated name, the associated lucky number is 9. Download

Haalim by Nemrah Ahmed - حالم از نمرہ احمد

Image
 Haalim by Nemrah Ahmed - حالم از نمرہ احمد حالم، نمرا احمد کا لکھا تازہ ترین ناول ہے۔ کئی ماہ تک ڈائجسٹ میں قسط وار شائع ہونے کے بعد گزشتہ سال اس کو کتابی شکل میں بھی پیش کر دیا گیا ہے۔ حالم ایک طویل ناول ہے اس کے دو حصے ہیں، حالم حصہ اول اور حالم حصہ دوم۔ لفظ حالم کا مطلب ہے خواب دیکھنے والی۔ نمرا احمد کے ناولوں میں ایک کردار ہمیشہ چلبلی، نٹ کھٹ اور بہت کچھ کرنے کا عزم رکھنے والی لڑکی کا ہوتا ہے پھر چاہے وہ نمل کی حنین ہو یا قراقرم کا تاج محل کی پریشے، حالم کی تالیہ بھی مختلف نہیں ہے۔ ناول کا مرکزی کردار تالیہ مراد نامی ایک کان وومین* کا ہے یعنی پیشہ ور دھوکے باز۔ تالیہ اپنی ایک ساتھی کے ساتھ مل کے کان** کرتی ہے۔ اس پیشے میں ان کا موٹو یہ ہے کہ دوسرے کو دھوکہ اس طرح دو کہ اسے لگے کہ وہ اس کا اپنا خیال ہے نہ کہ کسی کا دھوکہ۔ تالیہ اپنے کان میں بہت کامیاب ہے اور اس نے اس دھوکہ دہی سے بہت زیادہ دولت بٹوری ہے۔ ناول کے ابتدائی حصے کو پڑھتے ساتھ ہی اس کی انسپیریشن سڈنی شیلڈن کے لکھے ناول اف ٹومارو کمز*** سے ملتی ہوئی محسوس ہوتی ہے جس کا مرکزی کردار بھی ایک کان وومین تھی جس نے اپنے کان سے

La Pata by Nemrah Ahmed - لاپتہ از نمرہ احمد

Image
 La Pata by Nemrah Ahmed - لاپتہ از نمرہ احمد مدت ہوئی کہ خود سےکہیں لاپتہ ہوں میں گم راستے پہ ہوں یا گم راستہ ہوں میں شام کی ٹھنڈی ہوا چل رہی تھی۔ دوپہر میں خوب بارش ہوئی تھی جس کہ وجہ سے ہری گھاس ابھی تک گیلی تھی۔ ڈرائیو وے کا فرش بھی پانی کی تہہ سے شیشے کی مانند چمک رہا تھا۔ وہ موسم سے جیسے بے نیاز سی لان کے وسط میں رکھی کرسی پر ٹانگ پر ٹانگ رکھے بیٹھی تھی۔ چائے کا کپ سامنے میز پر رکھا تھا اور اخبار کے صفحات گھٹنوں پر پھیلائے وہ کوئی سیاسی کالم پڑھنے میں منہمک تھی۔ Download

Gumaan by Nemrah Ahmed - گمان از نمرہ احمد

Image
 Gumaan by Nemrah Ahmed - گمان از نمرہ احمد Guman Novel By Nimra Ahmed Pdf Download novel download is a famous urdu novel. Guman Novel By Nimra Ahmed Download Novel Read Online. Also download pdf books, urdu novels and urdu digests in pdf format. You can find here urdu novels list, romantic urdu novels, history novels and horror novels. Also downlaod here monthly digests in pdf format. Ebook of Guman Novel By Nimra Ahmed Pdf novel format is available in good quality. Download

Hadd by Nemrah Ahmad - حد از نمرہ احمد

Image
 Hadd by Nemrah Ahmad - حد از نمرہ احمد حد از نمرہ احمد "اس دنیا کی ناراضگیاں یہیں تک ہوتی ہیں باباجان. . جان کنی کے بعد ہر روح کو صرف اپنی نجات کی فکر ہوتی ہے. .!" نمرہ احمد کا بہترین ناولٹ۔۔ دولت کے لالچ میں رشتوں کو بھول جانے والوں کی کہانی۔۔ Download

Namal by Nemrah Ahmad - نمل از نمرہ احمد

Image
 Namal by Nemrah Ahmad - نمل از نمرہ احمد ’میں نے جو آپ کی کتاب سے سیکھا تھا ‘ اسے اپنی زندگی پہ اپلائی کیا۔ جس علم کو اپلائی ہی نہ کیا جائے وہ تو ایسے ہے جیسے گدھے پہ کتابیں لاد دی گئی ہوں۔ ایسا علم بوجھ بن جاتا ہے۔میں نے ‘ اے شیخ ‘ آپ کی کتاب ختم کر لی اور میں اب اس کے آخری باب کے متعلق بات کرنے آئی ہوں۔‘‘ ’’پھر ....کیا سیکھا تم نے میری کتاب سے ؟‘‘ ’’میں نے یہ سیکھا کہ ہر انسان vulnerable ہے۔ اس کے اردگرد کا موسم ایک سا نہیں رہتا۔کبھی موسم بدلتا ہے تو ہوا میں گردش کرتے مختلف وائرس اسے آ کر جکڑ لیتے ہیں۔ ایسے ہی ماحول بھی بدلتا رہتا ہے ۔ نئے ماحول ‘ نئی یونیورسٹی کالج ‘ نیا موبائل فون ‘ ان سب عناصر کے باعث اسے مرضِ عشق کا وائرس آن لگتا ہے۔ اس میں اس کا قصور نہیں ہوتا۔ پھر وہ کیا کرتا ہے ‘ یہاں سے اس کا امتحان شروع ہوتا ہے۔‘‘ ’’تو تمہارے خیال میں پھر اسے کیا کرنا چاہیے؟‘‘ درس کا وقت ختم ہو چکا تھا اور امتحان شروع ہو چکا تھا ۔ استاد نے تختیاں پرے ہٹا دیں اور پوری توجہ سے اس کا جواب سننے لگے۔وہ کہہ رہی تھی ۔ ’’اسے دو کام کرنے چاہئیں۔ پہلا غضِ بصر ۔ نظر جھکانا۔ وہ شخص جس کی وجہ سے دل ڈسٹ

Pahari ka Qaidi by Nemrah Ahmad - پہاڑی کا قیدی از نمرہ احمد

Image
 Pahari ka Qaidi by Nemrah Ahmad - پہاڑی کا قیدی از نمرہ احمد چھت پر لگا پنکھا معمول کے مطابق سست روی سے گھوم رہا تھا۔ ہر گزرتے دن کے ساتھ جہاں گرمی میں اضافہ ہوتا جارہا تھا وہاں بجلی بھی ہلکی ہوتی جا رہی تھی۔ نہ صرف گرمی پنکھے کے پروں کے گھومنے سے پیدا ہونے والی گڑگڑ کی آواز بھی میرے لیے کوفت کا باعث بنی ہوئی تھی۔ مجھے کسی نہ کسی طرح ایک کولر۔۔۔۔۔۔۔۔۔ Download

Jannat ke Pattay by Nemra Ahmad - جنت کے پتے از نمرہ احمد

Image
 Jannat ke Pattay by Nemra Ahmad - جنت کے پتے از نمرہ احمد The life of LLB (Hons) student Haya Suleman took an interesting turn when she received scholarship to study a five-month semester at a university in Turkey, but the circumstances became grave when someone leaked a private video of her made at a party on the internet. To keep the video away from the eyes of the members of her traditional family and to avoid any complications, she had to contact an officer of the Cyber Crime Cell who could have had her video removed. But soon she was unsettled by the fact that this faceless officer already knew so much about her. Will Haya be able to get that video removed from the internet? Will she be able to go to Turkey? And more importantly, will she finally be able to meet "him", him who she has never met before but has been searching for for many years? From the streets of Istanbul to the Bosporus sea, from the caves of Cappadocia to the torture cells in Indian jails, Jannat Kay